پنجاب سیف سٹیزا تھارٹی میں72ویں یوم آزادی کی پروقار تقریب کا انعقاد

14 Aug 2018

img_9901بہ تسلیمات دفتر تعلقات عامہ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی لاہور۔
میڈیا مینیجر
ہینڈآوٹ نمبر59

پنجاب سیف سٹیزا تھارٹی میں72ویں یوم آزادی کی پروقار تقریب کا انعقاد
800آفیسرز نے اکٹھے قومی ترانہ پڑھ کر سماں باندھ دیا؛ چینی وفد کی خصوصی شرکت
پولیس کیمو نیکیشن آفیسرزنے ملی نغمے ،آزادی کی مناسبت سے خاکے اور تقاریر پیش کیں
اتھارٹی میں قومی پرچموں کی بہار، تقریب کیلئے دفتر کو نہایت خوبصورتی سے سجایا گیا
چودہ اگست تجدید عہد وفا کا دن ہے؛ہم سب مل کر وطن عزیز کو اقوام عالم میں مقام دلوائیں گے:علی عامر ملک 
نوجوان اپنی خداداد صلاحیت اوران تھک محنت سے مملکت خداداد کو مضبوط سے مضبوط تر بنا رہے ہیں:اکبر ناصر خان

لاہور13اگست:۔۔۔

پنجاب سیف سٹیزا تھارٹی ہیڈکوارٹر میں 72ویں یوم آزادی کی پروقار تقریب کا انعقادکیا گیا ۔ تقریب میں 800پولیس کمیونیکیشن آفیسرز اور عملے نے ایک ساتھ قومی ترانہ پڑھ کر سماں باندھ دیا ۔ تقریب کے مہمان خصوصی مینیجنگ ڈائریکٹر پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی علی عامر ملک تھے۔ چیف آپریٹنگ آفیسراکبر ناصر خان،چیف ایڈمنسٹریشن آفیسرمحمد کامران خان اورمنصوبے پر کام کرنے والے چینی مہمانوں کے وفد نے خصوصی طور پر پروگرام میں شرکت کی۔ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی میں منعقدہ تقریب اس حوالے سے بھی منفرد تھی کہ ادارے میں 25فیصد خواتین آفیسرز فرائض سرانجام دے رہی ہیں جنہوں نے پروگرام میں بھرپور شرکت کی۔ پنجاب پولیس انٹیگریٹڈ کمانڈ کنٹرول اینڈ کمیونیکیشن سینٹر میں موجود مختلف گراؤنڈ فورسز کے نمائندگان نے بھی تقریب میں شرکت کی۔ یوم آزادی کی تقریب میں پولیس کمیونیکیشن آفیسرز نے آزادی کی مناسبت سے قومی ترانے، مزاحیہ اور سنجیدہ خاکے اور تقاریر پیش کیں۔ تقریب کی خاص بات یہاں آٹھ سو سے زائد افراد کا ایک ساتھ قومی ترانہ پڑھنا تھا۔ اس موقع پر پولیس کا خصوصی بینڈ بابر علی بیلا کی سربراہی میں شرکاء کو خوبصورت دھنوں سے محظوظ کرتا رہا۔ تقریب کے شرکاء نے قومی پرچم کی مناسبت سے لباس زیب تن کررکھے تھے۔ شرکاء نے ہاتھوں میں قومی پرچم تھام کر ملک سے والہانہ محبت کا اظہار کرتے ہوئے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے۔ تقریب کے اختتام پر ملکی سا لمیت اور خوشحالی کیلئے ڈھیروں دعائیں مانگی گئیں ۔
*****

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *