فارن سورس اکیڈمی میں زیر تربیت 15 دوست ممالک کے سفارتکاروں کاپنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کا دورہ

13 Feb 2019

4

بہ تسلیمات دفتر تعلقات عامہ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی، لاہور۔

میڈیا مینیجر

ہینڈ آؤٹ نمبر 186

فارن سورس اکیڈمی میں زیر تربیت 15 دوست ممالک کے سفارتکاروں کاپنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کا دورہ 

وفد میں وفد میں نیپال، عراق،سری لنکا، سوڈان ، ازبکستان، آزربائیجان، کینیا، تاجکستان مالدیپ ، الجیریا، باربودا، گوٹیملا، سموا، لبریا، اور پاپا نیوجونیاکے سفارتکار شامل

سیف سٹی منصوبے سے پاکستان کا سکیورٹی پروفائل بہتر ہوا ہے:

نوجوان سفارتکار سکیورٹی کا بہترین منصوبہ مکمل کرکے پنجاب نے بہت سے ممالک کو پیچھے چھوڑ دیا ہے:غیر ملکی سفارتکار

لاہور 13فروری:۔۔۔

فارن سورس اکیڈمی اسلام آباد میں زیر تربیت دوست ممالک کے سفارتکاروں نے پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کا دورہ تعلیمی دورہ کیا۔ 25رکنی وفد میں15 دوست ممالک کے نوجوان سفارتکار شامل تھے۔ وفد میں نیپال، عراق،سری لنکا، سوڈان ، ازبکستان، آزربائیجان، کینیا، تاجکستان، مالدیپ ، الجیریا، باربودا، گوٹیملا، سموا، لبریا، اور پاپا نیوجونیاکے سفارتکار شامل تھے۔ نوجوان سفارتکاروں کے وفدکو چیف ایڈمن آفیسرمحمدکامران خان نے پراجیکٹ کی کارکردگی اور صلاحیت بارے تفصیلی بریفنگ دی۔ وفد کو ایمرجنسی کنٹرول سینٹر، ایڈوانس ٹریفک مینجمنٹ سسٹم اورآپریشنز اینڈ مانیٹرنگ سینٹر بارے بریفنگ دی گئی۔ انہیں فیشل ریکگنایزیشن ٹیکنالوجی، اے این پی آر کیمروں اور ای چلاننگ کے مراحل بارے بتایا گیا۔ اس موقع پرغیر ملکی سفارتکاروں کا کہنا تھاکہ نیشنل سکیورٹی کا یہ بہترین منصوبہ مکمل کرکے صوبہ پنجاب نے بہت سے ممالک کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیف سٹی منصوبے سے پاکستان کا سکیورٹی پروفائل بہتر ہوا ہے۔ نوجوان سفارتکاروں نے کہا کہ پنجاب پولیس کے افسران نے کم وقت میں جدید منصوبے کو مثالی انداز میں مکمل کیاہے جو قابل ستائش ہے۔ اس موقع پر چیف ایڈمنسٹریشن آفیسر محمد کامران خان نے وفد کو بتایا کہ عالمی سطح پر یہ منصوبہ جدید ترین ہے جس میں اکثریت نوجوانوں کی ہے جو پوری تندہی سے اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ سیف سٹیز اتھارٹی میں سوشل میڈیا پر آگاہی اور مانیٹرنگ کے حوالے سے بھی جدید خطوط پرنظام استوار کیا گیا ہے۔ دورے کے اختتام پر پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کی جانب سے وفد کویادگاری شیلڈز پیش کی گئیں۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *