NORWEGIAN POLICE AND BRITISH HIGH COMMISSION SECURITY OFFICERS VISIT PSCA
Published On: November 18, 2021

Norwegian Police and British High Commission Security officers visited PSCA, PPIC3 here on Thursday. The chief operating officer Muhammad Kamran Khan briefed the delegations about various arms and functions of the project and the advanced technologies supporting the same. The entourage was briefed about the IC3 sections dealing in 15 operations, police dispatch unit, video control unit, media monitoring unit, and the PSCA insignia cam-surveillance operations management center. On this occasion, The British Security advisor said that” international travelers must install women safety app on arrival in Pakistan. It is really commendable that state of the art and latest equipment of international standards is being installed in the city for its security, surveillance and seamless monitoring round the clock”. Norwegian Police officers on the occasion said that “PSCA’s infrastructure meets international standards” Norwegian police thank the authority for helping to complete the online police trial in 2017. The Chief Operating Officer Muhammad Kamran Khan briefed that Punjab Safe Cities Authority is providing all possible assistance to the relevant departments. Punjab police women safety app has also been provided to KPK and Baluchistan, and Pakistan women safety app will also be launched soon. Punjab police women safety app has been installed by more than 125,000 women so far. Later, commemorative shields were also exchanged between the Punjab Safe Cities Authority and the delegations at the end of the visit.

نارویجین پولیس آفیسرز اوربرطانوی ہائی کمیشن سکیورٹی آفیسرزنے پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کا دورہ کیا۔وفود کودورے کے موقع پر چیف آپریٹنگ آفیسرپنجاب سیف سٹیزا تھارٹی محمد کامران خان نے اتھارٹی بارے بریفنگ دی۔سیکورٹی آفیسرز نے اتھارٹی کے شہر بھر میں نصب کیمروں کے ذریعے مانیٹرنگ کے عمل کا جائزہ لیا۔وفد کو آپریشنز اینڈ مانیٹرنگ سینٹر، ایمرجنسی کنٹرول سینٹر، ڈسپیچ کنٹرول سنٹرکا دورہ کروایا گیا۔وفود کوایڈوانس ٹریفک مینجمنٹ سسٹم اورالیکٹرانک چلاننگ کے نظام بارے بتایا گیا۔وفود کوخواتین کیلئے بنائی گئی ویمن سیفٹی ایپ کے فیچرز بارے بھی بتایا گیا۔اس موقع پر برطانوی سکیورٹی ایڈوائزرمسٹرلین والکرکا کہنا تھا کہ انٹرنیشنل ٹریولرز کوپاکستان آمدپر ویمن سیفٹی ایپ لازمی انسٹال کرنی چاہیے۔پنجاب پولیس ویمن سیفٹی ایپ کوٹریول ایڈوائزری میں شامل کرینگے جبکہ نارویجین پولیس آفیسرز کا اس موقع پر کہنا تھا کہ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کا انفراسٹرکچر بین الاقوامی معیار پر پوراا ترتا ہے۔ناوریجین پولیس نے 2017میں پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کی جانب سے آن لائن پولیس ٹرائل مکمل کرنے میں مدد فراہم کرنے پر اتھارٹی کا شکریہ ادا کیا۔چیف آپریٹنگ آفیسر محمد کامران خان نے بتایا کہ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی تمام اداروں کو ہر ممکن تعاون فراہم کررہی ہے۔پنجاب پولیس ویمن سیفٹی ایپ کے پی کے،بلوچستان کو بھی فراہم کردی گئی ہے۔ بہت جلد پاکستان ویمن سیفٹی ایپ بھی بنائی جائیگی۔جس کو پورے ملک کی خواتین استعمال کرسکیں گی۔پنجاب پولیس ویمن سیفٹی ایپ اب تک 1لاکھ 25 ہزار سے زائد خواتین انسٹال کرچکیں ہیں۔بعد ازاں دورے کے اختتام پر پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی اور وفود کے مابین یادگاری شیلڈز کا تبادلہ بھی کیا گیا۔